All Pakistani Dramas Lists
Latest Episodes of Dramas - Latest Politics Shows - Latest Politics Discussions

View RSS Feed

All Blog Entries

  1. Khaaq Mein Ghuzra Hua Kal Nahi Dhoonda Kartei

    خاک میں گزرا ہوا کل نہیں ڈھونڈا کرتے
    وہ جو پلکوں سے گرا پل نہیں ڈھونڈا کرتے

    پہلے کچھ رنگ لبوں کو بھی دیئے جاتے ہیں
    یونہی آنکھوں میں تو کاجل نہیں ڈھونڈا کرتے

    بیخودی چال میں شامل بھی تو کر لو پہلے
    یوں تھکے پیروں میں پائل نہیں ڈھونڈا کرتے

    جس نے کرنا ہو سوال، آپ چلا آتا ہے
    لوگ جا جا کے تو سائل نہیں ڈھونڈا کرتے

    یہ ہیں خاموش اگر، اس کو غنیمت جانو
    یونہی جذبات میں ہلچل نہیں ڈھونڈا کرتے

    ...
    Categories
    Shairies
  2. Tumhei Jab Kabhi Milein Fursatein Mere Dil Se Bojh Utaar Do

    تمہیں جب کبھی ملیں فرصتیں ، مرے دل سے بوجھ اتار دو
    میں بہت دنوں سے اداس ہوں مجھے کوئی شام ادھار دو

    مجھے اپنے روپ کی دھوپ دو کہ چمک سکیں مرے خدوخال
    مجھے اپنے رنگ میں رنگ دو ، مرے سارے رنگ اتار دو

    کسی اور کو مرے حال سے نہ غرض ہے کوئی نہ واسطہ
    میں بکھر گیا ہوں سمیٹ لو ، میں بگڑ گیا ہوں سنوار دو

    مری وحشتوں کو بڑھا دیا ہے جدائیوں کے عذا ب نے
    مرے دل پہ ہاتھ رکھو ذرا ، مری دھڑکنوں کو قرار دو

    تمہیں صبح
    ...
    Categories
    Shairies
  3. Qabr K Aagosh Mein Jab Tak K So Jaati Hai Maa

    قبر کی آغوش میں جب تھک کے سو جاتی ہے ماں
    تب کہیں جا کے زرا تھوڑا سکوں پاتی ہے ماں

    اپنے بچوں کے غم میں ایسے گھل جاتی ہے ماں
    جوان ہوتے ہوئے بھی بوڑھی نظر آتی ہے ماں

    کب ضرورت ہو بچوں کو میری اتنا سوچ کر
    جاگتی رہتی ہیں آنکھیں اور سو جاتی ہے ماں

    گھر سے جاتا
    ...
    Categories
    Shairies
  4. Zindagi Khwaab Pareshaan Se Zyaada Tou Nahi

    زندگی خوابِ پریشاں سے زیادہ تو نہیں
    اس میں تعبیر بھی مل جائے یہ وعدہ تو نہیں

    بات نے بات اُلجھنے کی یہ خُو کیسی ہے؟
    یہ بتا تیرا بچھڑنے کا ارادہ تو نہیں

    کون خوشبو کے تعقب میں گیا دور تلک
    لوگ سادہ ہیں مگر اتنے بھی سادہ تو نہیں

    آپ جائیں گے تو ہم حد سے گزر
    ...
    Categories
    Shairies
  5. Meri Soch K Thahrei Paani Mein

    مری سوچ کے ٹھہرے پانی میں

    تیرے نین کنول جب ہنستے ہیں
    مرے دھیان کے اجلے آنگن میں
    جب صبح ستارے چنتی ہے
    جب شام کوئی سر دھنتی ہے
    جب اندیشوں کی بانہوں میں
    تیرے سانس کا ریشم کھلتا ہے
    جب ہرے کچور خیالوں میں
    تیرے جزبوں کا رس گھلتا ہے
    میں سوچتا ہوں ان رستوں میں
    ہم کتنی دیر کے بعد ملے
    جب کتنے موسم بیت گئے
    اس کرب کٹھور مسافت میں
    دل صدیوں چکنا چور ہوا
    اس ہجر کے تپتے صحرا میں
    کیا
    ...
    Categories
    Shairies

Log in