All Pakistani Dramas Lists
Latest Episodes of Dramas - Latest Politics Shows - Latest Politics Discussions

View RSS Feed

Sai-e-Lahasil

خلوص تیرا بھی اب زد میں آ گیا بانیؔ ۔ ۔۔۔۔۔ ۔ !!۔ ۔

Rate this Entry
      
   
چھپی ہے تجھ میں کوئی شے، اسے نہ غارت کر
جو ہو سکے تو کہیں دل لگا، محبّت کر

ادا یہ کس کٹے پتّے سے تُو نے سیکھی ہے
ستم ہوا کا ہو اور شاخ سے شکایت کر

نہ ہو مخل مرے اندر کی ایک دنیا میں
بڑی خوشی سے بر و بحر پر حکومت کر

وہ اپنے آپ نہ سمجھے گا تیرے دل میں ہے کیا
خلش کو حرف بنا، حرف کو حکایت کر

مرے بنائے ہوئے بت میں روح پھونک دے اب
نہ ایک عمر کی محنت مری اکارت کر

کہاں سے آ گیا تُو بزمِ کم یقیناں میں
یہاں نہ ہوگا کوئی خوش، ہزار خدمت کر

کچھ اور چیزیں ہیں دنیا کو جو بدلتی ہیں
کہ اپنے درد کو اپنے لیے عبارت کر

خلوص تیرا بھی اب زد میں آ گیا بانیؔ
یہاں یہ روز کے قصّے ہیں، جی برا مت کر !!!۔ ۔۔۔







Categories
~**Sha!r!**~

Comments

  1. Rujail's Avatar
    چھپی ہے تجھ میں کوئی شے، اسے نہ غارت کر
    جو ہو سکے تو کہیں دل لگا، محبّت کر

    very nice. . poori hi ghazal( ya nazam) achi he.
    shair ka poora naam kai he?
  2. Sai-e-Lahasil's Avatar
    Quote Originally Posted by Rujail
    چھپی ہے تجھ میں کوئی شے، اسے نہ غارت کر
    جو ہو سکے تو کہیں دل لگا، محبّت کر

    very nice. . poori hi ghazal( ya nazam) achi he.
    shair ka poora naam kai he?

    بہت شکریہ جناب۔ میرے خیال میں یہ غزل ہے۔ اور میرا خیال غلط بھی ہو سکتا ہے

    یہ شاعر کا تخلص ہے اور مکمل
    بانیؔ ہی ہے۔ گو ان کے متعلق زیادہ علم نہیں، مجھے انکی شاعری کافی پسند ہے، رئلیسٹک سا لکھتے ہیں۔۔ شاعر کا پورا نام راجندر سم تھنگ ہے۔ معذرت ٹھیک سے مکمل نام ذہن میں نہیں آ رہا۔
  3. Rujail's Avatar
    Quote Originally Posted by Sai-e-Lahasil

    بہت شکریہ جناب۔ میرے خیال میں یہ غزل ہے۔ اور میرا خیال غلط بھی ہو سکتا ہے

    یہ شاعر کا تخلص ہے اور مکمل
    بانیؔ ہی ہے۔ گو ان کے متعلق زیادہ علم نہیں، مجھے انکی شاعری کافی پسند ہے، رئلیسٹک سا لکھتے ہیں۔۔ شاعر کا پورا نام راجندر سم تھنگ ہے۔ معذرت ٹھیک سے مکمل نام ذہن میں نہیں آ رہا۔

    رئیلسٹک شاعری ہی سمجھ میں* آجاتی ہے میرے۔ اچھا راجندر نام ہے۔ میں راجندر سم تھنگ سے یہ سمجھا کہ ی کوئی چینی نزاد پاکستانی یا انڈین شاعر ہیں۔
    مزید کلام آپکے پاس ہو تو ضرور شئیر کیجئے گا،
  4. Rujail's Avatar
    ٭……راجندر منچندا بانیؔ
    مرے بدن میں پگھلتا ہوا سا کچھ تو ہے
    اِک اور ذات میں ڈھلتا ہوا سا کچھ تو ہے

    مِری صدا نہ سہی، ہاں مرا لہو نہ سہی
    یہ موج موج اچھلتا ہوا سا کچھ تو ہے

    جو میرے واسطے کل زہر بن کے نکلے گا
    ترے لبوں پہ سنبھلتا ہوا سا کچھ تو ہے

    بدن کو توڑ کے باہر نکلنا چاہتا ہے
    یہ کچھ تو ہے، یہ مچلتا ہوا سا کچھ تو ہے

    یہ میں نہیں…… نہ سہی، اپنے سرد بستر پر
    یہ کروٹیں سی بدلتا ہوا سا کچھ تو ہے

    مرے وجود سے جو کٹ رہا ہے گام بہ گام؎
    یہ اپنی راہ بدلتا ہوا سا کچھ تو ہے

    جو چاٹتا چلا جاتا ہے مجھ کو اے بانیؔ
    یہ آستین میں پلتا ہوا سا کچھ تو ہے

    ------------------------------------


    ٭……راجندر منچندا بانیؔ

    جانے وہ کون تھا اور کس کو صدا دیتا تھا
    اُس سے بچھڑا ہے کوئی اتنا پتہ دیتا تھا

    اُس کی آواز کہ بے داغ سا آئینہ تھی
    تلخ جملہ بھی وہ کہتا تو مزہ دیتا تھا

    دن بھر ایک ایک سے وہ لڑتا جھگڑتا بھی بہت
    رات کے پچھلے پہر سب کو دعا دیتا تھا
    وہ کسی کا بھی کوئی نشہ نہ بجھنے دیتا
    دیکھ لیتا کہیں امکاں تو ہوا دیتا تھا

    اِک ہنر تھا کہ جسے پا کے وہ پھر کھو نہ سکا
    ایک اک بات کا احساس نیا دیتا تھا

    جانے بستی کا وہ اک موڑ تھا کیا
    اس کے لئے شام ڈھلتے ہی وہاں شمع جلا دیتا تھا

    ایک بھی شخص بہت تھا کہ خبر رکھتا تھا
    ایک تارا بھی بہت تھا کہ ضیا دیتا تھا

    رخ ہوا کا کوئی جب پوچھتا اس سے بانیؔ
    مٹھی بھر خاک، خلا میں اُڑا دیتا تھا

    ------------------------------------

    ٭……راجندر منچندا بانیؔ

    دوستو کیا ہے تکلف مجھے سر دینے میں
    سب سے آگے ہوں میں کچھ اپنی خبر دینے میں

    پھینک دیتا ہے اِدھر پھُول وہ گاہے گاہے
    جانے کیا دیر ہے دامن مِرا بھر دینے میں

    شاعری کیا ہے کہ اِک عمر گنوائی ہم نے
    چند الفاظ کو امکان و اثر دینے میں

    بات اِک آئی ہے دل میں نہ بتائوں اُس کو
    عیب کیا ہے مگر اظہار ہی کر دینے میں

    اسے معلوم تھا اک موج مرے سر میں ہے
    وہ جھجھکتا تھا مجھے حکمِ سفر دینے میں

    میں ندی پارکروں سوچ رہا ہوں بانیؔ
    موج مصروف ہے پانی کو بھنور دینے میں

Log in