All Pakistani Dramas Lists
Latest Episodes of Dramas - Latest Politics Shows - Latest Politics Discussions

Thread: Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter

      
   
  1. #1
    fawad is offline Senior Member
    Edit>
     
    Join Date
    Apr 2008
    Posts
    980
    Quoted
    51 Post(s)

    Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter


    Fawad – Digital Outreach Team – US State Department

    مہمند ايجنسی کا واقعہ – امريکی سفير کا پيغام


    http:/utu.be/NEIPIT2OJJM

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreachstate.gov

    www.state.gov

    http://www.facebook.com/pages/USUrduDigitalOutreach/122365134490320?v=wall




  2. #2
    abkhan's Avatar
    abkhan is offline Expert Member
    Edit>
     
    Join Date
    Aug 2008
    Posts
    4,325
    Quoted
    2286 Post(s)

    Re: Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter

    Kisi zamanay main pigeons messages deliver kiya kartay thay

    Aaj kal yeh kaam "Karayee kay tutto" kartay hain !!!!

  3. #3
    fawad is offline Senior Member
    Edit>
     
    Join Date
    Apr 2008
    Posts
    980
    Quoted
    51 Post(s)

    Re: Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter



    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ


    کسی بھی اعلی امريکی عہديدار يا سفارت کار کی جانب سے جاری ہونے والا اس قسم کا بيان واضح طور پر صدر کی زير قيادت امريکی حکومت کی سرکاری پاليسی کی عکاسی کرتا ہے۔ مہمند ايجنسی کے واقعے کے بعد امريکی سفارت کار کيمرون منٹر کی جانب سے جو بيان جاری ہوا وہ محض ان کے ذاتی خيالات ہی نہيں تھے بلکہ وہ ہماری حکومت کے سرکاری موقف اور نقطہ نظر کی غمازی کرتا ہے۔

    وہ راۓ دہندگان جو اس واقعے کے ضمن ميں صدر اوبامہ کی جانب سے کسی بھی پيغام کی عدم موجودگی کا تذکرہ کر رہے تھے، ان کو باور کروانا چاہتا ہوں کہ صدر اوبامہ نے پاکستانی صدر آصف زرداری کو فون کر کے ذاتی طور پر پاکستان اور افغانستان کے سرحدی علاقے ميں 24 پاکستانيوں کی ہلاکت کے المناک واقعے پر رنج وغم کا اظہار کر کے ان سے تعزيت کی۔ صدر نے يہ واضح کر ديا کہ يہ افسوس ناک واقعہ قطعی طور پر پاکستان پر دانستہ حملہ نہيں تھا اور اس واقعے کے ضمن ميں امريکہ کی جانب سے مکمل تحقيقات کے مصمم ارادے کا اعادہ کيا۔ دونوں ممالک کے صدور نے امريکہ اور پاکستان کے مابين دو طرفہ تعلقات کو جاری رکھنے کے ضمن ميں اپنے کاوشيں جاری رکھنے کا عزم کيا جو دونوں اقوام کی سيکورٹی کے ليے انتہائ ضروری ہے۔ اس کے علاوہ دونوں قائدين نے مسلسل روابط برقرار رکھنے پر بھی آمادگی ظاہر کی۔
    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreachstate.gov

    www.state.gov

    http://www.facebook.com/pages/USUrduDigitalOutreach/122365134490320?v=wall




  4. #4
    NOMANZAFAR is offline Star Member
    Edit>
     
    Join Date
    Jun 2009
    Posts
    1,910
    Quoted
    209 Post(s)

    Re: Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter

    I guess its the time for USA "TO DO MORE".

  5. #5
    fawad is offline Senior Member
    Edit>
     
    Join Date
    Apr 2008
    Posts
    980
    Quoted
    51 Post(s)

    Re: Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    يہ کوئ اچنبے کی بات نہيں ہے کہ نيٹو کی جانب سے پاکستان کی سرحدوں کے اندر پيش آنے والے واقعے کو بنياد بنا کر بعض تجزيہ نگار اور مبصر اسی سوچ اور نظريے کا پرچار کر رہے ہيں جس کے تحت امريکہ پاکستان کے اندر دانستہ عدم استحکام پيدا کرنے کا خواہ ہے۔ ہر واقعے کو اس کے درست تناظر اور ميرٹ پر پرکھنا ہی دانش مندی ہے۔ اس ميں کوئ شک نہيں کہ يہ ايک افسوس ناک واقعہ ہے ليکن يہ ايک مشترکہ دشمن کے خلاف جاری ايک ايسی فوجی کاروائ کے دوران پيش آيا جس پر باہم اتفاق موجود ہے۔ يہ واقعہ پاکستان اور اس خطے کے ليے امريکی حکومت کی پاليسی کا آئينہ دار نہيں ہے۔


    عالمی سطح پر يہ ايک طے شدہ حقیقت اور واضح سچائ ہے کہ کسی بھی فوجی کاروائ کے دوران ايسے واقعات رونما ہوتے ہيں جو کسی کی دسترس ميں نہيں ہوتے۔ يہ واقعات انسانی غلطی يا ناگزير واقعات اور حالات کے نتيجے ميں پيش آ سکتے ہیں۔ اسی تناظر ميں ايسے "فرينڈلی فائر" والے واقعات بھی پيش آۓ ہيں جن کے نتيجے ميں افسوس ناک طريقے سے خود امريکی اور نيٹو افواج کی ہلاکتيں ہوئ ہيں۔ اس کا يہ مطلب ہرگز نہيں ہے کہ يہ واقعات بھی کسی سازش کا نتيجہ تھے۔


    امريکی حکومت کی پاليسی، اہداف اور مقاصد حکومت پاکستان اور فوج کے ساتھ اس طويل المدت تعاون سے واضح ہيں جس کی بنياد دونوں ممالک کے درميان اعتماد کو بڑھانا ہے۔ اس مقصد کے حصول کے ليے وسائل اور مواقعوں ميں شراکت داری کے علاوہ ان دہشت گرد گروہوں کو قلع قمع کرنا بھی شامل ہے جو پاکستان کے ساتھ ساتھ عالمی امن اور سلامتی کے ليے بھی اصل خطرہ ہيں۔

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreachstate.gov

    www.state.gov

    http://www.facebook.com/pages/USUrduDigitalOutreach/122365134490320?v=wall





  6. #6
    fawad is offline Senior Member
    Edit>
     
    Join Date
    Apr 2008
    Posts
    980
    Quoted
    51 Post(s)

    Re: Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    سب سے پہلے تو ميں يہ واضح کر دوں جو واقعہ پيش آيا اس میں افغان افواج اور نيٹو شامل تھيں اور امريکی فوج اس وسيع گروپ کا ايک حصہ ہے۔ دانش کا تقاضا يہ ہے کہ اس واقعے کی جامع تفتيش کے ليے کچھ وقت درکار ہے چنانچہ درست حقائق کا انتظار کيا جانا چاہيے۔ واقعہ يقينی طور پر انتہائ افسوس ناک تھا اور ہم يہ تسليم کرتے ہيں کہ مستقبل ميں ايسے واقعات کی روک تھام کے لیے ہر ممکن اقدامات کيے جانے چاہيے۔


    امريکی فوج کی کبھی بھی يہ کوشش يا پاليسی نہیں رہی کہ پاکستانی فوجيوں اور سرحد کے دونوں جانب بے گناہ شہريوں کو ہلاک کيا جاۓ۔ امريکی حکومت اور عسکری قيادت اس بات سے بخوبی آگاہ ہے کہ پاکستان دہشت گردی کے خلاف اس عالمی کوشش ميں ہمارا اہم ترين اتحادی اور شراکت دار ہے جس کا مقصد خطے میں پائيدار امن کے قيام کو يقينی بنانا ہے۔

    ہم پاکستان کی خود مختاری کا احترام کرتے ہیں اور ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے کہ پاکستان کی سرحدوں کا احترام اور تقدس برقرار رہے۔ اس ضمن ميں يہ نشاندہی بھی ضروری ہے کہ ان غير ملکی دہشت گردوں کی کاروائيوں کو بھی مد نظر رکھنا چاہيے جو دانستہ پاکستان کی خود مختاری پر حملے کر رہے ہيں اور ملک بھر میں پاکستان کی افواج اور شہريوں کو قتل کرنے کے منصوبے تيار کر رہے ہيں۔ حال ہی ميں ايک ترک اخبار کی رپورٹ کے مطابق حقانی نيٹ ورک کی کاروائ کے نتيجے میں 21 ترک باشندے ہلاک ہوۓ ہيں۔

    امريکہ اور پاکستان دونوں کو اس حقيقت کا ادراک ہے کہ پاکستان اور افغانستان کی سرحدوں کے دونوں اطراف ان دہشت گردوں پر توجہ مرکوز کرنے کی ضرورت ہے جو دونوں ممالک کی خود مختاری پر حملے کر رہے ہيں۔

    پاکستان ميں امريکی سفير کيمرون منٹر، وزير خارجہ ہيلری کلنٹن اور ديگر سينير امريکی سفارت کاروں نے اس واقعے پر اظہار افسوس بھی کيا ہے اور افواج پاکستان سميت ان خاندانوں سے اظہار تعزيت کيا ہے جن کے عزيز اس واقعے ميں ہلاک و زخمی ہوۓ ہيں۔

    ميں آپ کو يقين سے کہہ سکتا ہوں کہ وہ دہشت گرد اور ان کے سرغنہ جو دانستہ پاکستان کے فوجيوں کو روزانہ نشانہ بناتے ہيں اور ان پر حملے کرتے ہيں، وہ کبھی بھی اپنی کاروائيوں پر اظہار افسوس نہيں کريں گے۔ وہ راۓ دہندگان اور تبصرہ نگار جو ہم پر اس واقعے کے ضمن ميں، جو کہ يقينی طور پر قابل افسوس ہے ہم پر تنقید کر رہے ہيں انھيں چاہیے کہ اپنی غيض و غضب کا رخ ان عناصر کی جانب کريں جو نا صرف يہ کہ پاکستان کے فوجيوں پر دانستہ حملے کر رہے ہيں بلکہ ان حملوں کو اپنی کاميابياں قرار دے کر ان کا پرچار بھی کرتے ہيں۔

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreachstate.gov

    www.state.gov
    http://www.facebook.com/pages/USUrduDigitalOutreach/122365134490320?v=wall







  7. #7
    fawad is offline Senior Member
    Edit>
     
    Join Date
    Apr 2008
    Posts
    980
    Quoted
    51 Post(s)

    Re: Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ



    حقيقت يہی ہے کہ پاکستانی فوج کسی بھی موقع پر ہدف نہيں تھی اور جانوں کا ضياع يقينی
    طور پر المناک اور افسوس ناک ہے اور يہی وجہ ہے کہ صدر اور امريکی سفارت کار سميت تمام سينير امريکی حکومتی عہديداروں نے اس واقعے کے حوالے سے اپنے جذبات کا اظہار کيا ہے۔

    جو راۓ دہندگان يہ سوچ رکھتے ہيں کہ اس قسم کا واقعہ کسی دانستہ کوشش کے بغير پيش آ ہی نہيں سکتا انھيں چاہيے کہ "فرينڈلی فائر" کے واقعات کے حوالے سے اعداد وشمار کا جائزہ ليں۔

    يہ امر کہ دنيا بھر ميں اس قسم کے واقعات اتنے تواتر کے ساتھ پيش آ چکے ہيں کہ اس حوالے سے ايک تکنيکی اصطلاح بھی موجود ہے، حقائق کو واضح کرنے کے ليے کافی ہے۔ تاريخ کے اوراق ميں ايسے سينکڑوں واقعات موجود ہيں جن ميں دشمن کی جانب کيا جانے والا حملہ غلطی سے اپنے ہی نقصان کا پيش خيمہ ثابت ہوا۔ تاريخی طور پر ايسے واقعات کا اکثر محرک دشمن کا قريب ہونا رہا ہے۔ پہلی اور دوسری جنگ عظيم ميں ايسے واقعات عام تھے جب افواج ايک دوسرے کے قريب ہوا کرتی تھيں اور خطرناک ہتھياروں کا استعمال کيا جاتا تھا۔

    حاليہ جنگوں بشمول افغانستان ميں جاری لڑائ ميں بھی ايسے کئ واقعات رپورٹ ہوۓ ہيں جہاں دوست اور اتحادی افواج پر غلطی سے حملے ہوۓ، اس مغالطے ميں کہ وہ دشمن کی افواج ہيں۔ ايسے معرکے جن ميں بہت زيادہ نقل وحرکت اور کئ اقوام کی افواج شامل ہوں ايسے واقعات کا سبب بن سکتے ہيں جيسا کہ پہلی گلف وار کے دوران پيش آنے والے واقعات سے ظاہر ہے۔ يا پھر عراق کی جنگ کے دوران ايک برطانوی جہاز کی امريکی پيٹرياٹ کے ذريعے تباہی کی مثال اس ضمن ميں دی جا سکتی ہے۔

    فرينڈلی فائر کے واقعات کے نتيجے ميں اموات کے واقعات کوئ نئ بات نہيں ہے۔ بدقستمی سے يہ جنگوں کا حصہ رہا ہے۔

    ماضی قريب سے اس ضمن ميں کچھ مثاليں

    دسمبر 5 2003 کو ايک امريکی بی – 52 طيارہ اپنے ہدف سے چوک گيا اور غلطی سے ان زمينی فوجيوں پر بم گر گيا جو طالبان کے ٹھکانوں کی جانب رہنمائ کر رہے تھے۔ اس واقعے ميں 3 امريکی فوجی اور 5 افغان فوجی ہلاک ہو گۓ۔ اس کے علاوہ 40 افراد زخمی بھی ہوۓ۔ افسران کا يا ماننا تھا کہ بی – 52 طيارے کو ہدف کے حوالے سے جو معلومات فراہم کی گئ ان کی ترسيل ميں خرابی سے يہ واقعہ پيش آيا۔

    اسی طرح افغانستان ميں اسی نوعيت کا رپورٹ ہونے والا ايک اور واقعہ۔

    ISAF accident, friendly fire lead to deaths - CNN

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    digitaloutreachstate.gov

    www.state.gov

    http://www.facebook.com/pages/USUrduDigitalOutreach/122365134490320?v=wall








  8. #8
    fawad is offline Senior Member
    Edit>
     
    Join Date
    Apr 2008
    Posts
    980
    Quoted
    51 Post(s)

    Re: Mohmand Agency incident – Message from Ambassador Munter

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ

    امريکی حکومت پاکستانی فوجيوں کی ہلاکت پر دکھ اور تکليف کے جذبات اور ان کے اظہار کو تسليم بھی کرتی ہے اور ان کو سمجھتی بھی ہے۔ ميں نے فورمز پر بارہا يہ کہا ہے کہ پاکستانی فوجی کسی بھی وقت مطلوبہ ہدف نہيں تھے۔ يہ دونوں جانب سے غلطيوں، روابط ميں کمزوری اور ہم آہنگی ميں فقدان کے باعث يکے بعد ديگرے واقعات کے تسلسل کا نتيجہ تھا جو اس اندوہناک حادثے کا سبب بنا۔


    امريکی محکمہ دفاع کی جانب سے اس واقعے کی تفتيش کے حوالے سے جو رپورٹ شائع کی گئ ہے، وہ راۓ عامہ، ميڈيا تبصروں يا کسی تاثر کی بنياد پر نہيں تيار کی گئ ہے۔ اس رپورٹ کا مقصد ان حقائق اور حالات کی حقيقت جاننا تھا جو اس واقعے کا سبب بنے تا کہ مستقبل ميں ايسے واقعات کو روکا جا سکے۔


    رپورٹ سے يہ واضح ہو گيا ہے کہ امريکی فوجيوں کو جو معلومات ميسر تھيں، ان کی بنياد پر اپنے دفاع ميں اس وقت کاروائ کی جب ان پر فائر کيا گيا۔ اس ضمن ميں ايسی کوئ دانستہ اور جان بوجھ کر کوشش نہيں کی گئ کہ ايسے علاقے يا افراد کو ٹارگٹ کيا جاۓ جو پاکستانی فوج سے منسلک تھے۔ ميں يہ بھی واضح کر دوں کہ جب اس حقيقت کا ادراک ہوا کہ پاکستانی فوجی علاقے ميں موجود ہيں تو زمين پر فوجی قيادت نے فوری طور پر فوجی کاروائ روک کر پيچھے ہٹ جانے کا حکم جاری کيا۔


    امريکی فوجی قيادت اور نيٹو کمانڈرز نے قيمتی جانوں کے ضياع اور پاکستانی اور امريکی فوجوں کے درميان مناسب روابط کی کمی پر گہرے افسوس کا اظہار کیا جو اس عظيم نقصان کا سبب بنا۔ اور اس حوالے سے ہم اپنی جانب سے کی جانے والی غلطيوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہيں۔ رپورٹ ميں موجود تفصيلات سے يہ واضح ہے کہ واقعے کے دوران پاکستان اور امريکہ کے مابين رابطے کا شديد فقدان تھا۔


    حتمی بات يہی ہے کہ اس حادثے کی مشترکہ ذمہ داری ہے اور ہم نے يہ واشگاف الفاظ ميں کہہ ديا ہے کہ جہاں تک ہماری جانب سے کی جانے والی غلطيوں کا تعلق ہے تو ہم اس کی ذمہ داری قبول کرتے ہيں۔ دونوں جانب سے معلومات کی ترسيل کے نظام ميں کوتائ رہی۔ اور يہی معلومات کی کمی اس روز پيش آنے والے واقعے کا حتمی سبب بنی۔


    کسی بھی مخصوص واقعے کے حوالے سے دو الگ نقطہ نظر اور زاويے ہوتے ہيں۔ ليکن سب سے اہم بات يہ ہے کہ قابل تحقيق شواہد کو بنياد بنايا جانا چاہيے، نا کہ راۓ زنی کی بنياد پر فيصلے صادر کيے جائيں۔

    آپ اس رپورٹ کا تفصيلی مطالعہ اس لنک پر کر سکتے ہيں۔
    http://www.defense.gov/transcripts/transcript.aspx?transcriptid=4952

    فواد – ڈيجيٹل آؤٹ ريچ ٹيم – يو ايس اسٹيٹ ڈيپارٹمينٹ


    digitaloutreachstate.gov


    www.state.gov


    http://www.facebook.com/pages/USUrduDigitalOutreach/122365134490320?v=wall





Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •  

Log in